عمومی اطلاعِ عام (دوہرے الفاظ کے استعمال سے متعلق)


اگر ذرا کچھ غور سے آپ میرے اس کلامِ ہذا میں غور کریں تو آپ کو لگ پتا چل جائے گا کہ اہلِ زبان والے اگر یہ کہنا چاہیں کہ بخدا کی قسم! شبِ جمعہ کی رات کو ساحلِ سمندر کے کنارے ایک صاحبِ حیثیت والا شخص آبِ زم زم کے پانی سے رو بقبلہ منہ کرکے استفادہ حاصل کررہا تھا تو اِن شاء اللہ اگر رب نے چاہا تو وہ تا قیامت تک یہ بات کہہ سکنے کی طاقت نہ پائیں گے، بلکہ اس طرح کی غلطیوں پر چوک کرنے سے آدمی از خود اپنی بے عزتی آپ خراب کرتا ہے، کیونکہ وجہ یہ ہے کہ اس جیسے جملوں کی طرح میں لغتِ اردو کی زبان کا بے فضول ستیاناس خراب ہوجاتا ہے۔ 
لہٰذا اس لیے آپ سے مؤدبانہ طور پر عرضِ گزارش ہے کہ ایسی تعجب خیز عجیب باتوں سے حسبِ طاقت کے موافق اپنی شیریں لسانی کی مٹھاس کو بحفاظت محفوظ رکھیں۔ اﷲ تعالیٰ آپ کو بہت بہت جزائے کثیر کا بدلہ عنایت دے۔
n

میرا مختصر تعارف

نام: محمد اسامہ تخلص: سَرؔسَری زبان: اردو ملک: پاکستان شہر: کراچی مذہب:مسلمان مسلک: اہل السنۃ الجماعۃ مقصد: علم و ادب کا فروغ